’میری زینب نہیں رہی میں کیا کہوں، مجھے انصاف چاہیے‘، زینب کی والدہ

0

قصور میں زیادتی کے بعد قتل ہونے والی 7 سالہ بچی زینب کے والدین کا کہنا ہے کہ قاتلوں کی گرفتاری تک بیٹی کی تدفین نہیں کریں گے۔

عمرے کی ادائیگی کے بعد اسلام آباد پہنچنے پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے قصور میں زیادتی کے بعد قتل ہونے والی بچی کے والد کا کہنا تھا کہ پولیس نے بچی کو ڈھونڈنے میں تعاون نہیں کیا، اگر پولیس فوری طور پر کارروائی کرتی تو ملزمان گرفتار ہو جاتے۔

بچی کے والد کا کہنا تھا کہ جب تک ملزمان گرفتارنہیں ہوتے اس وقت تک بیٹی کی تدفین نہیں کریں گے۔ انہوں نے چیف جسٹس آف پاکستان اور آرمی چیف سے واقعے کا نوٹس لینے اور انصاف فراہم کرنے کی اپیل بھی کی۔

زینب کی والدہ کا اس موقع پر کہنا تھا کہ ’میری زینب نہیں رہی میں کیا کہوں، مجھے انصاف چاہیے‘۔

یاد رہے کہ 7 سالہ زینب کی لاش گزشتہ روز شہباز روڈ سے ملی تھی، زینب کے قتل کے واقعے پر پورا شہر سراپا احتجاج ہے اور مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے پولیس کی فائرنگ سے 2 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔