کشمیر نہ پہلے بھارت کا حصہ تھا اور نہ ہے: سید علی گیلانی

مقبوضہ جموں و کشمیر کے بزرگ حریت رہنما سید علی گیلانی کہتے ہیں بھارت فسطائیت کی طرف بڑھ رہا ہے۔ بھارت سرکار اقلیتیوں کو ان کے حقوق دینے میں...

مقبوضہ جموں و کشمیر کے بزرگ حریت رہنما سید علی گیلانی کہتے ہیں بھارت فسطائیت کی طرف بڑھ رہا ہے۔ بھارت سرکار اقلیتیوں کو ان کے حقوق دینے میں ناکام ہوچکی ہے۔ ہمارے جغرافیائی ، ثقافتی اور مذہبی روایات کسی بھی صورت بھارت سے مطابق نہیں رکھتے۔ کشمیر نہ پہلے بھارت کا حصہ تھا اور نہ ہے۔

بھارت کے نام نہاد جمہوریت کے دعوے، سید علی گیلانی نے کھری کھری سنادیں۔ کہتے ہیں بھارت جمہوریت نہیں فسطائیت کی جانب بڑھ رہا ہے، بھارت میں اقلیتوں کے ساتھ جو سلوک کیا جا رہا ہے وہ ساری دنیا جانتی ہے

بھارت میں نام نہاد جمہوریت کا راگ الاپنے والے بھارتیہ جنتا پارٹی کے لیڈر سریندر سنگھ کو منہ توڑ جواب دیتے ہوئے سید علی گیلانی نے کہا کہ بھارت میں میں جمہوریت نہیں فاشزم ہے، جہاں اقلیتوں کو بنیادی سہولیات میسر نہ ہوں وہ جمہوریت نہیں فاشزم کا دور دورہ ہوتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہندوستان میں جمہوریت کا راگ الاپنے والے اس بات کو بھول گئے ہیں کہ مقبوضہ کشمیر میں کیا ظلم ڈھائے جا رہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہمارے جغرافیائی ، ثقافتی اور مذہبی روایات کسی بھی صورت بھارت سے مطابق نہیں رکھتے، کشمیر نہ پہلے بھارت کا حصہ تھا اور نہ ہے، کشمیریوں کی اکثریت مسلمانوں کی ہے اور پاکستان سے الحاق چاہتی ہے، بھارت ہندوتوا کا نظریہ اپنے پاس رکھے اور کشمیریوں کے حق رائے دہی کا احترام کرے، آخر میں انہوں نے دہلی میں گرفتار کشمیری تاجر بلال کاوا کی بلاجواز گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کشمیریوں کو جھوٹے مقدمات میں گرفتارکرنا بھارت کی پرانی روایت ہے۔

Loading...
Categories
پاکستان

RELATED BY